بھارت کو کشمیرمیں آبادی کا تناسب تبدیل کرنے سے روکنا ہوگا‘ سردار عتیق احمد خان

مظفرآباد :آل جموں و کشمیر مسلم کانفرنس کے قائد اور سابق وزیراعظم سردار عتیق احمد خان نے کہا کہ بھارت نے کشمیری عوام کی تاریخ جغرافیہ آبادی کا تناسب تبدیل کرنے کا فیصلہ کیا ہے جسے ہر صورت میں اپنے مذموم مقاصد پر عملدرآمد سے روکنا ہوگا۔ پاکستان کی طرف سے کوئی ایسا اقدام نہیں ہونا چاہیے جس سے ہندوستان کو کوئی سہولت حاصل ہو۔ وہ گزشتہ روز اولڈ سیکرٹریٹ میں آل پارٹیز کشمیر کانفرنس کے زیر اہتمام کشمیر ریلی سے خطاب کررہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پاکستان کو آزاد کشمیر ، مقبوضہ کشمیر یا گلگت کے حوالے سے کوئی ایسا فیصلہ نہیں کرنا چاہیے جس سے بھارت کو قبضے کی جوازیت مل سکے خواہ یہ اقدام کسی داخلی سہولت کیلئے ہو یا کسی دبائو کیلئے ۔ پاکستان کا 70سال سے ایک ہی موقف ہے اور ستر سال کے موقف پر ریاست کی وحدت اور قائداعظم کی پالیسی کا خیال رکھنا ہوگا۔ جب تحریک آزادی مضبوط ہوگی تو پوری ریاست آزاد ہوکر پاکستان کا حصہ بنے گی ۔ انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کے عوام کی نظریں اس وقت بیس کیمپ اور اس کی قیادت پر لگی ہیں اور ہمیں اس اہم مرحلے میں اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔بھارت کا ہاتھ روکنا ہوگا اور اس کے ساتھ اپنی پالیسی کو تاریخی موقف اور مقبوضہ کشمیر کے عوام کی خواہشات سے ہم آہنگ رکھنا ہوگا۔ انہوں نے صدر آزاد کشمیر بیرسٹر سلطان محمود چوہدری کا شکریہ ادا کیا جنہوں نے صدارت کا منصب سنبھالنے کے بعد آزاد کشمیر کی تمام جماعتوں اور آل پارٹیز حریت کانفرنس کی مشاورت کے ساتھ آزاد کشمیر میں بیداری کی یہ تحریک شروع کی ہے ۔ اس تحریک کو آگے بڑھانے کے لئے اور مقبوضہ کشمیر کی تحریک کو تقویت دینے کیلئے ہم سب ایک ہیں