جعلی شناختی کارڈ کے معاملے میں 136 افسران معطل کردیے ہیں، شیخ رشید

وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید نے کہا ہے کہ جعلی شناختی کارڈ سے متعلق لاتعداد شکایات موصول ہوئی تھیں جس کے بعد جعلی شناختی کارڈ کے معاملے میں 136 افسران کا معطل کردیا ہے۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کے دوران انہوں نے کہا کہ نادرا کے 90 افسران کے خلاف انکوائری جاری ہیں جبکہ تقریباً 300 افسران کو چارج شیٹ جاری کردی گئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ آئندہ چند ماہ میں جعلی شناختی کارڈ کا ’گند‘ صاف کردیں گے۔

پنڈورا پیپرز سے متعلق سوال کے جواب میں شیخ رشید نے کہا کہ پنڈورا پیپرز کھودا پہاڑ نکلا چوہا، جو نام سامنے آئے ہیں وہ تو پہلے بھی اسی طرح چل رہے تھے۔

وفاقی وزیر نے وزیر اعظم عمران خان کا حوالہ دے کر کہا کہ انہوں نے پنڈورا پیپرز میں شامل تمام شخصیات کے خلاف تحقیقات کا اعلان کیا ہے۔

علاوہ ازیں انہوں نے کہا کہ اسلام آباد میں ناکے ختم کرکے 130 موٹرسائیکل پر شروع کیے جانے والے ایگل موبائل اسکوڈ منصوبے کے میں نیا ایئر پٹرولنگ یونٹ کا جلد افتتاح کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ ایئر پٹرولنگ یونٹ میں 12 ڈرونز شامل ہوں گے اور رواں ہفتے منصوبے کا افتتاح کریں گے۔

انہوں نے افسوس کا اظہار کیا کہ اسلام آباد پولیس کے پاس 70 برس سے لوکیٹرز دستیاب نہیں ہیں تاہم محکمہ پولیس کو 2 لوکیٹرز فراہم کیے جارہے ہیں اور محکمے میں ایک ہزار اہلکاروں کی بھرتی کی جائے گی۔

شیخ رشید نے پاسپورٹ کے اجرا سے متعلق کہا کہ محکمہ پاسپورٹ میں سروسز کی بہتری کے لیے غیرمعمولی اقدامات کیے جارہے ہے اور اب 24 گھنٹے کے اندر پاسپورٹ حاصل کیا جا سکے گا۔