سانحہ اے پی ایس کے مبینہ ملزم کی 8 سال بعد گرفتاری کا دعویٰ

پشاور  سانحہ آرمی پبلک اسکول میں ملوث مبینہ ملزم کی 8 سال بعد گرفتاری کا دعویٰ، کاونٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ پشاور نے دو مختلف کارروائیوں میں آرمی پبلک اسکول پر حملے میں ملوث دہشتگرد جان ولی اوربھتہ خور دہشتگرد حماد اشرف کو گرفتارکرلیا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق سال 2014 کو آرمی پبلک سکول(اے پی ایس) پشاور پر دہشت گردوں کے حملہ سے 151 طلباء و اسٹاف ممبران شہید اور تقریبا ً 147 زخمی ہوئے تھے جبکہ 7 خود کش بمباروں نےدوران وقوعہ خودکو بلاسٹ کیا تھا۔

کاونٹر ٹیرارزم ڈیپارٹمنٹ نے مقدمہ درج رجسٹر کرکے نامعلوم دہشتگردوں کی گرفتار ی کے لئے سپیشل چھاپہ مار ٹیمیں مقرر کی تھیں، سانحہ میں ملوث اہم دہشتگرد جان ولی عرف شینا ولد علی مست سکنہ باڑہ ضلع خیبر کو بمقام کارخانوں مارکیٹ نزد طورخم اڈہ سے گرفتار کیا گیا ہے۔