ن لیگ کا آزاد کشمیر الیکشن کی انتخابی مہم مریم نواز کو سونپنے کا فیصلہ

پاکستان مسلم لیگ ن نے آزاد کشمیر الیکشن کی انتخابی مہم مریم نواز کو سونپنے کا فیصلہ کرلیا۔ میڈیا ذرائع کے مطابق پاکستان مسلم لیگ ن کے قائد اور سابق وزیراعظم نوازشریف کا اپوزیشن لیڈر شہباز شریف سے ٹیلی فونک رابطہ ہوا ، جس میں آزاد کشمیر الیکشن کے حوالے سے مشاورت کی گئی ، اس دوران دونوں رہنماؤں نے آزاد کشمیر الیکشن کی انتخابی مہم مریم نواز کو سونپنے پر اتفاق کیا۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ مسلم لیگ ن کی انتخابی حکمت عملی کے تحت آزاد کشمیر الیکشن میں ن لیگ کے صدر شہباز شریف اور نائب صدر ن لیگ مریم نواز اپنی جماعت کے امیدواروں کی انتخابی مہم چلائیں گے ، اس دوران شہباز شریف اور مریم نواز الگ الگ اجتماعات سے خطاب کریں گے۔
دوسری طرف پاکستان مسلم لیگ ن کے اہم رہنما نے الیکشن سے قبل تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کر دیا ، آزاد کشمیر کابینہ کے اہم رکن سردار میر اکبر خان نے مسلم لیگ ن سے علیحدگی کا اعلان کر دیا ، انہوں نے پی ٹی آئی میں شمولیت اختیار کرلی ، سردار میر اکبر خان نے پاکستان تحریک انصاف کے چیف آرگنائزر سینیٹر سیف اللہ نیازی سے ملاقات کی جس کے دوران ن لیگ سے علحیدگی کا اعلان کیا، ملاقات میں وزیر امور کشمیر و گلگت بلتستان علی امین گنڈا پور بھی موجود تھے ، سردار اکبر خان نے اس موقع پر وزیراعظم عمران خان کی قیادت اور پی ٹی آئی کی منشور پر اعتماد کا اظہار بھی کیا جب کہ پی ٹی آئی کی جانب سے سردار میر اکبر خان کو ایل اے 16 باغ سے امیدوار نامزد کرنے کا اعلان کیا ہے۔

خیال رہے کہ آزاد کشمیر قانون ساز اسمبلی کے گیارویں عام انتخابات کا شیڈول جاری کر دیا گیا ہے ، آزاد کشمیر کی قانون ساز اسمبلی کے لیے انتخابات 25 جولائی کو ہوں گے ، امیدوار 21 جون شام 4 بجےتک کاغذات نامزدگی داخل کروا سکتے ہیں، 26 جون تک کاغذات کی جانچ پڑتال کی جائے گی، 27 جون تک اعتراضات داخل کروائے جا سکیں گے، 2 جولائی تک کاغذات کی واپسی ہو سکے گی، 3 جولائی کوامیدواروں کی حتمی فہرست آویزاں ہوگی، اور امیدارواں کو انتخابی نشانات 4 جولائی کو الاٹ ہوں گے۔