سردار سکندرحیات خان کے بیان سے دکھ ہوا، چوہدری طارق فاروق

آزاد کشمیر کے سینئر وزیرو مسلم لیگ ن کے سینئر نائب صدر چوہدری طارق فاروق نے کہا ہے کہ سکندر حیات زیرک اور سمجھدار سیاست دان ہیں۔ مریم نواز اور نواز شریف کے حوالے سے ان کی گفتگو نا مناسب ہے۔ ماضی سے سیکھنے کی ضرورت ہے نہ کہ اس میں گھسے رہنے کی۔ مسلم لیگ بنانے میں ان کی کوششیں ضرور شامل رہی ہیں‘تاہم وہ لیگ کی قیادت کے حوالے سے غیر ضروری بات نہ کریں۔ ان سے اپیل ہے کہ وہ آئندہ سیاسی بیان بازی آزاد کشمیر تک محدود رکھیں، سکندر صاحب اس وقت پارٹی چھوڑ گئے تھے حب انہوں نے بیرسٹر سلطان کے ہمراہ عمران خان سے ملاقات کی تھی۔ مجھے سکندر حیات اور عتیق خان کی جوڑی زیادہ دیر چلتی دکھا ئی نہیں دے رہی۔ سینئر صحافیوں کے ساتھ بات چیت کے دوران چوہدری طارق فاروق نے کہا کہ پارٹی کے اندر اختلاف ہوتے رہتے ہیں لیکن ہم نے ان اختلافات کو مرکزی قیادت تک پہنچنے سے پہلے ہی ختم کیا۔ مسلم لیگ کے ارکان بکاﺅ مال نہیں ہے، سب نواز شریف کے ساتھ ہیں۔ میاں صاحب کے جمہوریت کے حوالے سے بیانیہ کو آگے لیکر آزاد کشمیر میں آئندہ انتخابات میں حصہ لیں گے۔ چوہدری طارق فاروق نے کہا نواز لیگ کے تمام ارکان پارٹی پالیسی کے تحت چل رہے ہیں۔ سردار عتیق کی موجود گی میں نہ سکندر صاحب پارٹی سربراہ اور نہ ہی سپریم لیڈر ہیں، اس سے اندارزہ لگایا جا سکتا ہے کہ آمدہ انتخابات میں ان کا کیا کر دار ہو گا۔ انہوں نے کہاکہ آزاد کشمیر کے عام انتخابات میں نہ دھند آئے گی اور نہ ہی ہم اتنے کمزور ہیں کہ ہمارے علاوہ کوئی اور حکومت بنا سکتا ہے۔ اصل فیصلہ عوام نے کرنا ہے اور عوام نواز لیگ کو کارکردگی کی بنیاد پر ووٹ دے گی۔ آمدہ انتخابات میں وفاق کی مداخلت کا عوامی سطح پر شدید رد عمل ہو گا۔ آزاد کشمیر سبز چرا گاہ نہیں ہے۔ یہ ایک حساس علاقہ ہے جہاں عام انتخابات کے موقع پر وفاقی حکومت کی مہم جوئی اچھے نتائج نہیں دے سکتی ہے۔انہوں نے کہاکہ مسلم لیگ نواز کا ہر کارکن پارٹی کا وفادا ر ہے اور آزاد کشمیر میں وفاداریاں خریدی نہیں جا سکتی ہیں۔ حکومت آزاد کشمیر نے گزشتہ پانچ سال کے دوران بلا تفریق لوگوں کی خدمت کی جس کی بنیاد پر ہم آئندہ نہ صر ف انتخابات جیتِں گے بلکہ حکومت بھی بنائیں گے۔آزاد کشمیر کے آمدہ انتخابات صرف کارکردگی کی بنیاد ہوں گے اور وہی جیت کا جشن منایں گے جن کو عوام میں مقبولیت ہے اور مسلم لیگ نواز اس وقت آزاد کشمیر کی سب سے بڑی اور سنجیدہ سیاسی لوگوں پر مشتمل جماعت ہے جو انتخابات کو ہڑ پ کرنے کی ہر کوشش اور سازش کا مقابلہ کر ئے گی۔ آزاد کشمیر کے انتخابات میں دھاندلی کے اچھے نتائج سامنے نہیں آ سکتے ہیں جس کی ذمہ دار وفاقی حکومت اور مداخلت کار ہوں گے۔